ادبستان اور تخلیقات کے مدیرِاعلیٰ رضاالحق صدیقی کا سفرنامہ،،دیکھا تیرا امریکہ،،بک کارنر،شو روم،بالمقابل اقبال لائبریری،بک سٹریٹ جہلم پاکستان نے شائع کی ہے،جسے bookcornershow room@gmail.comپر میل کر کے حاصل کیا جا سکتا ہے

اردو کے پہلے لائیو ویب ٹی وی ،،ادبستان،،کے فیس بک پیج کو لائیک کر کے ادب کے فروغ میں ہماری مدد کریں۔ادبستان گذشتہ پانچ سال سے نشریات جاری رکھے ہوئے ہے۔https://www.facebook.com/adbistan


ADBISTAN TV

بدھ، 29 اکتوبر، 2014

صبر و تسلیم و رضا کی انتہا شبیر ہیں ۔۔ ذوالفقار نقوی

ذوالفقار نقوی
کشتی ِ دین ِ خدا کے نا خدا شبیر ہیں
تابع ِ مرضی ِ حق، حق کی رضا شبیر ہیں
شمع ِ حق ، جانِ نبی، شان ِ وِلا شبیر ہیں
اصل میں وجہ ِ بنائے لا الہ شبیر ہیں
وارث ِ دین ِ محمد ، فاتح ِ کرب و بلا
پیکر ِ جود و سخا، لطف و عطا شبیر ہیں
صاف آ جائیں نظر جس میں نقوش ِ زندگی
گلشن ِ ہستی میں وہ اک آئینہ شبیر ہیں
آ رہی ہے عزم ِ ابراہیم کی اب تک صدا
صبر و تسلیم و رضا کی انتہا شبیر ہیں
فکر ِ انسانی کے پر جل جائیں جا کر جس جگہ
عالم ِ عرفان میں وہ ابتدا شبیر ہیں
لغزشیں دم توڑ بیٹھیں آ کے جس کے سامنے
وہ ثبات و عزم اور وہ حوصلہ شبیر ہیں
جو بدل دے آن میں عنوان ہائے زندگی
نقطہ بیں، نقطہ بیاں، وہ زاویہ شبیر ہیں
مشکلیں آتی ہیں در پر با سر ِ تسلیم خم
رہنما، مشکل کشا و لا فتیٰ شبیر ہیں
چھوڑ کر دامان ِ ابن ِ مرتضیٰ جائیں کدھر
قاسم ِ جنت امام ِ دوسرا شبیر ہیں
از محمد، تا محمد، تا بہ محشر تا خدا
جوڑ دے اِن سب سے جو ، وہ سلسلہ شبیر ہیں
روزِ محشر کا بھلا کیوں خوف ہو نقوی تجھے
تیرے رہبر ہیں محمد، رہنما شبیر ہیں
ذوالفقار نقوی

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں